وزارت آئی ٹی کی کارکردگی

جنگلوں کا بھی کوئی دستور ہوتا ہے۔ ویسے تو ہمارے ملک میں بھی ایک دستور موجود ہے، جس کے مطابق ایک پارلیمنٹ بنی ہے اور پارلیمنٹ میں بیٹھے لوگ کروڑوں پاکستانیوں کی زندگی کے اہم فیصلے کرتے ہیں۔ سنا ہے اس پارلیمنٹ کی کابینہ میں آئی ٹی کی ایک وزیر بھی ہیں، محترمہ انوشہ رحمان صاحبہ۔

انوشہ رحمان کو ویسے تو میں نے کئی بار ٹی وی پر دیکھا، مگر اتفاق ایسا ہوا کہ جب دیکھو دھاندلی کو لے کر تحریک انصاف کی قیادت پر تنقید کرتی نظر آتی ہیں۔ میں جب جب سائبر کرائم کے واقعات سنے اور دیکھے، میری آنکھوں کےسامنے دوسروں کے پرخچے اڑانے والی وزیر محترمہ انوشہ رحمان کا چہرہ گھوم کر رہ گیا۔ حال ہی میں لڑکیوں کو فیس بک کے ذریعے بلیک میل کرنے والے ایک لڑکے کو پکڑا گیا جو ایک اچھا اقدام تھا، مگر ایسے کتنے ہی مجرم ہمارے درمیان دندناتے پھرتے ہیں، جنہیں کوئی پوچھنے والی نہیں۔

میں نے سمجھنے کی بہت کوشش کی کہ آخر اس وزارت کا کام کیا ہے، جو تین سال میں یو ٹیوب سے پابندی تک نہیں اٹھا سکی۔ آئی ٹی کے شعبے کو تعلیمی میدان میں فروغ دینے سے لے کر اصلاحات کے عمل تک کتنے ہی کام اس وزارت کے دائرہ اختیار میں آتے ہیں، مگر اب تک کیا بہتری آئی،عوام کو کچھ خبر نہیں ۔ ہے کوئی وزارت آئی ٹی سے بھی کارکردگی کی رپورٹ لینے والا؟؟؟

لڑکیوں کو تنگ کرنے یا بلیک میل کرنے والے ایک لڑکے کی گرفتاری سے شاباشی نہیں ملتی انوشہ رحمان صاحبہ۔ کارکردگی وہ ہوتی ہے جو نظر آئے۔

قانونا وزارتوں کا کام بیان بازی اورسیاست کرنا نہیں ہوتا۔ مگر قانون کی چلتی ہی کہا ں ہے۔

خدا وندا جلیل و معتبر دانا و بینا منصف و اکبر

50% LikesVS
50% Dislikes

اپنا تبصرہ بھیجیں